امریکہ،برطانیہ اور فرانس کے مشترکہ حملے میں استعمال کیے جانے والے ہتھیار،جو آپ کو ورطہ حیرت میں ڈال دیں گے


Faizul Hassan Posted on April 15, 2018

شام میں امریکہ ،برطانیہ اور فرانس نے مل کر حملہ کیا اور حملے میں امریکی،فرانسیسی اور برطانوی لڑاکا طیارے استعمال کیے گئے ہیں،جدید طرز کے ہتھیاروں کو اس حملے میں استعال کیا گیا ہے ۔

حملے صبح کے وقت کیا گیا جس میں مختلف اہداف کو نشانہ بنایا گیا ہے جس میں دمشق میں کیمیکل ہتھیار بنانے والے سائینٹیفک سنٹر کو نشانہ بنایا گیا،حمص میں موجود کیمیائی ہتھیاروں کے ذخیرے کو تباہ کیا گیا ہے تین امریکی بی 1 لڑاکا طیاروں نے اس مشن میں حصہ لیا ہے ،برطانیہ کے 4 ٹارنیڈو جیٹ طیاروں اور فرانس کے لڑاکا طیارے نے شام میں بمباری کی،امریکہ کا دعویٰ ہے کہ اس حملے میں 100 ٹاماہاک میزائل داغے گئے ہیں،ایک ٹاماہاک میزائل کا وزن 1316 کلوگرام اور رفتار 550 میل فی گھنٹہ ہے اور یہ لگ بھگ 1000 میل تک کے فاصلے پر اپنے ہدف کا نشانہ بنانے کی اہلیت کا حامل ہے ۔